بہار کے جہان آباد میں پولیس زیادتی : رات کے اندھیرے میں سوتے ہوئے لوگوں کو جم کر پیٹا ؛ یکطرفہ کارروائی میں درجنوں لوگ زخمی

ببلو یادو اور ششی یادو نے چاومین کھانے کے دوران مسلم نوجوان کو یہ کہہ کر بری طرح پیٹا کہ مسلمان کورونا پھیلا تے ہیں

جہان آباد  (ایشیا ٹائمز / رضوان خان کی رپورٹ  )  بہار کے جہان آباد سے پولیس زیادتی کی  بڑی دل خراش خبریں موصول ہورہی ہیں  ذرائع کے مطابق 23 مئی 2021 کی شب 8 بجے نیو عظیم آباد (سو گاؤں پنچایت) ضلع جہان آباد بہارمیں ایک غریب مسلم نوجوان کو بغل کے گاوں میرا بگہا کے مکھی لال کا بیٹا ببلو یادو اوراس کا بھتیجا ششی یادو ولد متھلیش یادو نے چاومین  کھانے کے دوران مسلم نوجوان کو یہ کہہ کر بری طرح پیٹا کہ مسلمان کورونا پھیلا تا ہے اور یہ بھی کہا کہ مسلمان میرا کچھ نہیں بگاڑ سکتے کیوں کہ پولس پرساشن میرے اشارے پر کام کرتی ہے اور میرے والد  ٹہٹا تھانہ جہان آباد میں کام کرتے ہیں ہم جو چاہیں گے کریں گے۔

لڈو ولد صفدر عالم کا کہنا ہے کہ ببلو یادو اور ششی یادو نے غیر قانونی پستول اس کی ناک میں ڈال کر اس کی ناک کو بری طرح زخمی کر دیااور شیلو ولد آل حسن وارثی کو سر اور چہرے پر شدید چوٹ آئی ہے، مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ پولس نے یکطرفہ کارروائی کرتے ہوئے مسلمانوں کے گھروں میں گھس کر توڑ پھوڑ کی ،عمرداز اور بے قصوروں کو بری طرح مارا پیٹا ،جس کی وجہ سے مسلمانوں میں دہشت ہے اور لوگ بری طرح خائف ہیں-


Subscribe to our channel: https://www.youtube.com/c/AsiaTimesMe...
Check our website: https://www.asiatimes.co.in/

بتایا جاتاہے کہ اپنے باپ کی شہہ پر وہ اکثر وبیشتر مسلم محلے میں آکر گالم گلوج کرتا ہے غریب مسلمانوں کو گالیاں دینا اور مسلم لڑکوں کے ساتھ  مارپیٹ کرتاہے،وہ یہ بھی کوشش کرتا ہے کہ جھگڑے کو فرقہ ورانہ رنگ دے دیا جاے-23 مئی 2021 کی شب بھی اس نے یہی کیا اور اپنی گندی سازش میں اس طرح کام یاب ہوا کہ اس نے پولس کو بلاکر جس میں اس کا باپ مکھی لال یادو بھی موجود تھا ایک ایک مسلم گھر کی نشاندھی کرکے مسلم نوجوانوں کو گرفتار کروایا-

 

مکھی لال یادو جو کہ ٹہٹا تھانے کادلال اور پولس کی مخبری کا کام کرتا ہے کے اشارے پر پولس نے مسلم گھروں میں گھس کر لوگوں کو بری طرح پیٹا حتی کہ مکھیا پتی عطاالحق عرف چھوٹن مکھیا (پنچایت سو گاؤں ٹولہ بگوار،ضلع جہان آباد،بہار) کو بری طرح پیٹا اور ان کے ساتھ کئی معتبر سماجی شخصیات کی بھی پٹائی کردی ۔

واضح ہوکہ ٹہٹا تھانہ کا انچارج جان بوجھ کر فرقہ پرست ذہنیت رکھنے والوں کا حوصلہ بڑھا رہا ہیں، علاقے کے معتبر لوگوں کا کہنا ہے کہ جب تک مکھی لال کو تھانہ سے بری الزمہ نہیں کیا جاے گا علاقے میں ہندو مسلم فساد کا اندیشہ بنا رہے گا کیوں کہ مکھی لال نے اس سے قبل بھی کوشش کی ہے کہ غریب مسلمانوں کو فرقہ پرستی کی آگ میں جھونکا جائے ۔

مقامی لوگوں کا یہ بھی کہنا ہے کہ ببلو یادو پتا مکھی کا یادو ،ششی یادو پتا متھلیش یادو کے علاؤہ دھن راج ، ،پارس ،کلدیپ،سیلیش ،سدھیر ،اروند ،انل، مہندر پتا وشنو ،مکیش ، روی ،مکھی لال اور نے کل کی اس معمولی لڑائی کو فرقہ وارانہ رنگ دینے میں اہم رول ادا کیا ہے ، لہذا ایسے سبھی لوگوں کے ساتھ سخت کارروائی ہونی چاہیے- اور پولیس جن بے قصوروں کو پکڑ کر لے گئی ہے انہیں رہا کرے-

0 comments

Leave a Reply