عازمین حج کا پہلا گروپ جدہ پہونچا

 

نئی دہلی : ( ایشیا ٹائمز/ عرب نیوز) تاریخی شہر  مکہ مکرمہ نے حج 2020 کے لئے عازمین حج  کے استقبال کے لئے ایک بار

پھر اپنے بازو کھول دیے ہیں ، حالانکہ پچھلے سالوں کے مقابلہ میں صرف ایک مٹھی بھر افراد  ہی حج کا فریضہ ادا کر سکیں گے ۔


کوویڈ 19 وبائی بیماری کی وجہ سے  احتیاطی قدم اٹھاتے ہوئے  اس سال عازمین کی تعداد کو 10,000 ہزار تک محدود کر دیا گیا ہے  تمام  سعودی عرب میں مقیم افراد ہی اس سال شریک ہورہے ہیں ، جن میں سے 700 کے قریب غیر ملکی ہیں جو سعودی عرب میں سکونت پذیر ہیں ۔ عازمین کی تعداد کو 10,000 ہزار تک محدود کرنے کا اعلان سعودی حکومت  بہت پہلے کرچکی ہے ۔


عبداللہ الخطیری اماراتی شہری ہیں ،ابھی حال ہی میں کوویڈ 19 وبائی بیماری سے صحتیاب ہوئے ہیں گزشتہ برس اپنی شادی کی وجہ سے حج میں شرکت نہیں کر سکے تھے ، کہتے ہیں کہ گزشتہ برس جن لوگوں نے حج کیا تھا میں نے ان سے سنا تھا کہ اتنی بھیڑ بھاڑ کے باوجود ہر سال حج بہت ہی اطمینان کے ساتھ انجام پاتا ہے ، اس سال محدود افراد ہی شریک ہورہے ہیں ،یقینا یہ ایک بہتر موقع ہے ۔

بلغاریہ کی خدیجہ کی آنکھوں سے خوشی کے آنسو نکل پرے جب انہیں پتہ چلا کہ ان کا بھی نام حج کرنے والوں کی فہرست میں شامل ہے ، وہ کہتی ہیں مجھے امید نہیں تھی کہ میری درخواست قبول ہو جائے گی ، مجھے قوی امید ہے کہ اس سال کا حج بہت خاص ہوگا ۔


سعودی کے شہر قسیم میں کام کرنے والی  ٹیونیشیا کی فزیشین ڈاکٹر حنیفہ یوسف حمدون کہتی ہیں جب مجھے سفر حج کے کنفریشن کی اطلاع ملی تو مجھے یقین نہیں ہو رہا تھا ۔


سوڈان کے ایک عازم متازمحمد بھی قسیم خطے میں رہتے ہیں سعودی کی جانب سے کیے گئے  صحت اقدامات کی تعریف کرتے ہوئے کہتے ہیں ، سبھی کے لیے محفوظ طریقے سے حج کو یقینی بنانا ایک بڑا چیلنج والا قدم ہے ۔


 سعودی کی حج عمرہ وزارات نے جدہ پہونچنے عازمین کو ضروری سفری کاروائی مکمل کرنے کے بعد مکہ میں ان کی رہائش پہونچا دیا ہے،  یہاں سبھی عازمین  یہاں  30 جولائی سے حج شروع ہونے قبل تک کل  4 دن قیام کریں گے۔

0 comments

Leave a Reply