ڈاکٹر سلمیٰ رفیق کلاسیکی ادب کی بہت ہی ہو نہار اسکالر

 نئی دہلی:  ڈاکٹر سلمیٰ رفیق کلاسیکی ادب کی بہت ہی ہو نہار اسکالر ہیں ان کا تعلق ضلع بستی سے ہے وہ معروف عالم دین حضرت مولانا رفیق احمد قاسمی صاحب استاد معہد التعلیمی کی صاحبزادی ہیں ۔

اس سے پہلے ان کی ایک کتاب" حزن اختر"منظر عام پر آچکی ہے جو نواب واجد علی شاہ اختر کی مثنویوں پر  لکھی گئی انتہائی تحقیقی و تنقیدی بصیرت سے پر ایک نادر کتاب ہے حال ہی میں  ان کی مرتب شدہ لکھنؤ کی ہی تہذیب پر  عہد شاہی کا ایک نایاب ناول آیا ہےجس کا نام صوفیہ ہے جو لکھنؤ کی قدیم اور روایتی تہذیب کا امین ہے  ۔

یہ ناول اب سے کوئی 100 سال پہلے مرزافداعلی خنجر لکھنوی نے لکھا تھا جس کو دوبارہ بہت عرق ریزی کے ساتھ مر تب کیا گیا ہے اور اس ترتیب نے ناول کے حسن میں چار چاند لگا دیا ہے ۔

ناول پڑھنے کے لائق ہے اور سب سے بڑی بات یہ ہے کہ یہ ناول اس علاقے سے تعلق رکھنے والی ایک اسکالر نے ترتیب دیا ہے جو علاقہ علمی اعتبار سےانتہائی پسماندہ ہے دو کتابیں تصنیف و ترتیب دے کر ڈاکٹر سلمیٰ رفیق نے  علاقے کی توقیر میں اضافہ کیا ہے۔ دلی مبارک باد۔۔۔

0 comments

Leave a Reply