26/09/2017


بابری مسجد کامعاملہ اپنی دیکھ ریکھ میں حل کرے عدالت/ وسیم خان

مہنداول ،سنت کبیر نگر : آل انڈیا مجلس اتحادالمسلمین کے سنت کبیر نگر کے ضلع جنرل سکریٹری وسیم خان نے ایک پریس ریلیز جاری کر کہا ہے کہ بابری مسجد کا معاملہ صرف عدالت میں ہی حل کیا جاسکتا ہے ۔اگر عدالت کے باہر اس معاملے کے حل ہونے کا امکان ہوتا تو اس سلسلے میں کئی دفعہ کوششیں کی جا چکی ہیںجو بے سود رہیںاگر اس معاملے کو عدالت کے باہر حل کرنے کی کوشش کی گئی تو ماضی کی طرح کوئی نتیجہ برآمد ہونے والا نہیں ہے صرف وقت کی بربادی کے علاوہ کچھ حاصل ہونے والا نہیں ہے ۔

انھوں نے یہ بھی کہا کہ اس کئی د ہائیوں پرانے معاملے کو عدالت کے ذریعہ جلد از جلد سلجھا لینا چاہئے اور عدالت اس معاملے میں جو بھی فیصلہ دے وہ سبھی کوآئین ہند کی بالا دستی اور اسکا ملحوظ رکھتے ہوئے بلا چون و چرا مان لینا چاہئے کیونکہ عدالت ہی سب سے اوپر ہے عدالت سے اوپر کوئی نہیں ہے ۔عدالت نے اگر اس معاملے کو عدالت کے باہر حل کرنے کے لئے کہا ہے تو یہ ایک نیک مشورہ ہے ہم اس نیک مشورے کی عزت کرتے ہیں لیکن ساتھ ہی یہ مانگ بھی کرتے ہیں کہ عدالت اپنی دیکھ ریکھ میں ثبوت وشواہد کی بنیاد پر فیصلہ دے تاکہ ملک کو یہ پیغام جا سکے کہ آئین وقانون ہی سب سے بالا تر ہے اور آئین ہند میں اعتماد رکھنے والو ں کا اعتماد آئین کے تئیں اور مظبوط ہو سکے ۔           انھوں یہ بھی کہا کہ سیکولرازم کی ٹھیکیدار سیاسی جماعتیںآج کہاں چلی گئیںمایاوتی ای وی ایم کا رونا رورہی ہیں اور ملائم و اکھلیش یوگی آدیتیہ ناتھ کے وہاں مہما نی کر رہے ہیں لیکن اس معاملے میں بولنے کے لئے کوئی بھی تیار نہیں ہے کیونکہ آج ان کوووٹوں کی ضرورت نہیں ہے الیکشن میں تو ابھی کافی وقت ہے۔ 

  
                                                                  





دیگر خبروں

2
3
4