26/09/2017


بہار کے وزیر اعلی نتیش کمار اور وزیر اعظم نریندر مودی کی یہ گرم جوشی قابل دید ہے ؛ کانگریس کی حکومت والی نو ریاستوں سمیت مغربی بنگال، تمل ناڈو، اتر پردیش اور اوڈیشہ کے وزیر اعلی میٹنگ سے دور رہے

نئی دہلی : (پی ٹی آئی ) نیتی آیوگ کی میٹنگ میں حصہ لینے کے لئے پہنچے بہار کے وزیر اعلی نتیش کمار اور وزیر اعظم نریندر مودی نے بڑی گرم جوشی سے ہاتھ ملایا۔ غور طلب ہے کہ دونوں رہنما ایک دوسرے کے سخت مخالف مانے جاتے ہیں اور اکثر ایک دوسرے پر براہ راست اور بالواسطہ طور پر سیاسی الزام عاید کرتے ہوئے دیکھے جاتے ہیں۔

کانگریس حکومت والی نو ریاستوں کے وزیر اعلی اور مغربی بنگال، تمل ناڈو، اتر پردیش اور اوڈیشہ کے وزیر اعلی بدھ کو وزیر اعظم کی صدارت میں ہوئی آپریشن کونسل کی میٹنگ سے دور رہے۔ اس میٹنگ میں آراضی بل سمیت مختلف امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

نیتی آیوگ  کی آپریشن کونسل کی اس دوسری ملاقات میں این ڈی اے حکومت والی  ریاستوں کے وزرائے اعلی کے علاوہ بہار کے وزیر اعلی نتیش کمار، دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال اور تری پورا کے وزیر اعلی مانک سرکار نے حصہ لیا۔

جموں و کشمیر کے وزیر اعلی مفتی محمد سعید بھی اجلاس میں شامل رہے۔ لیکن مغربی بنگال کی وزیر اعلی ممتا بنرجی، تمل ناڈو کی جے۔ جے للتا، اوڈیشہ کے نوین پٹنائک اور اتر پردیش کے وزیر اعلی اکھلیش یادو اجلاس میں نہیں پہنچے۔

نیتی آیوگ کی آپریشن کونسل میں تمام وزیر اعلی اور مرکز کے زیر انتظام علاقوں کے لیفٹینینٹ  گورنر شامل ہیں نیتی آیوگ  کے  چیر مین وزیر اعظم ہیں۔ مودی نے متنازعہ آراضی حصول بل سمیت مختلف مسائل پر ریاستوں کے ساتھ غور کرنے کے لئے یہ میٹنگ بلائی تھی۔

اجلاس میں غربت، صحت اور مرکز سپانسر اسکیموں جیسے مسائل پر بھی غور کیا جانا تھا۔ کانگریس لیڈروں نے اس سے پہلے کہا تھا کہ پارٹی کے وزیر اعلی اس میٹنگ میں حصہ نہیں لیں گے، تاکہ حکومت کو متنازعہ تحویل آراضی  بل کو  آگے بڑھانے سے روکا جا سکے۔





دیگر خبروں

2
3
4