ناصر عزیز ساؤتھ ایشین مائیناریٹیز لایرس ایسوسی ایشن ( سا ملا ) کے نئے صدر منتخب

 

نئی دہلی 27 جون:  وکلاء کی معروف تنظیم ساملا (ساؤتھ ایشین مائیناریٹیز لایرس ایسوسی ایشن) کی گورننگ کاؤنسل نےاتفاق راۓ سے تنظیم کے اساسی ممبر اور موجودہ سکریٹری  ایڈووکیٹ ناصر عزیز کو  تنظیم کا نیا صدر منتخب کیا ہے۔  اس سے قبل سماجی کارکن  اور مشہور وکیل محمود پراچہ اس تنظیم کے صدر تھے

واضح رہے کہ ساملا کا قیام اب سے 13 برس قبل اس وقت عمل میں آیا تھا جب فیروز غازی ایڈوکیٹ نے اپنے چند رفقاۓ کار وکلاء کے ساتھ ملکر وکلاء کی ایک ایسی تنظیم  بنانے کا ارادہ کیا تھا جو جنوبی ایشیا میں اقلییّوں کے حقوق کی حفاظت اور ان کی آواز کو اٹھانے کا مقصد پورا کرے . اقلیتوں کے تعلیمی، قانونی اور سماجی معاملات بھی اس تنظیم کے دائرہ کار میں شامل ہیں.  گزشتہ دہائی میں ساملا نے  شاندار طریقے سے کام  کیا اور اپنے  کارناموں کے باعث  ایک الگ مقام پیدا کر لیا ۔

اس تنظیم سے بڑی معروف اور قابل قدر  سماجی اور ملی شخصیات وابستہ ہیں جن میں سابق وزیر قانون  سلمان خورشید  اس کے سرپرست ہیں.

ایڈوکیٹ ناصر عزیز  ایک سرکردہ وکیل، سماجی خدمت گار اور شاعر ہیں. مختلف سماجی اور ادبی تنظیموں سے وابستہ ہیں. شمال مشرقی دہلی کےحالیہ فسادات کے دوران ان کی تنظیم" انسانیت فرسٹ "نے قابل قدر خدمات انجام دی ہیں اور امید کی جا رہی ہے کہ وہ ساملا کو اور متحرک، فعال اور با مقصد بنانے میں اہم رول ادا کریں گے.

ایڈوکیٹ ناصرعزیز نے ساملا کی گورننگ کاؤنسل کا شکریہ ادا کرتے ہوۓ کہا کہ ان کے رفقاء نے انہیں جو ذمہ داری سونپی ہے وہ اس کو احسن طریقے سےپورا کریں گے اور اپنے رفقا اور ممبران کے تعاون  سے ساملا کو نئی جہتوں سے روشناس کرائیں گے. ان کا کہنا ہے کہ موجودہ وقت میں ساملا جیسی تنظیمیں سماج میں  امن و آشتی، صلح کل اور بھائی چارے کے فروغ کے لئے بہت اہم کردار بنھا سکتی ہیں.

یہ اطلاع ساملا کے سکریٹری جنرل ایڈوکیٹ فیروز غازی نے دی ہے.

گورننگ کاؤنسل کی میٹنگ میں  جے ایچ جعفری، سید منصور علی، معراج احمد خان،  محمد سعید خان اور سید  عامر  احمد  ایڈوکیٹس بھی موجود تھے. ایڈوکیٹ شنیف احمد شریک نہ ہو سکے

0 comments

Leave a Reply